تازہ ترین
ملی مسلم لیگ ملک بھر میں سیاسی سرگرمیاں جاری رکھے گی، کشمیر ہماری سیاست کی بنیاد ہے:سیف اللہ خالد

ملی مسلم لیگ ملک بھر میں سیاسی سرگرمیاں جاری رکھے گی، کشمیر ہماری سیاست کی بنیاد ہے:سیف اللہ خالد

پشاور( پاکستان اپڈیٹس ) ملی مسلم لیگ کے صدر سیف اللہ خالد نے کہا کہ ملی مسلم لیگ ملک بھر میں سیاسی سرگرمیاں جاری رکھے گی۔ ہم ملک میں مذہب اور سیاست کو لے کر اتحاد کی فضا پیدا کرنا چاہتے ہیں۔ کشمیر ہماری سیاست کی بنیاد ہے۔ بانی پاکستان نے کشمیر کو پاکستان کی شہ رگ قرار دیا ہے۔ ہم یو این کی قرار دادوں کی روشنی میں مسئلہ کشمیر کو اٹھائیں گے۔ کشمیریوں کے ساتھ پوری قوم کو کھڑا کریں گے۔ ان خیالات اظہار انہوں نے پشاور کے سنیئر صحافیوں، مدیران اور الیکٹرونک میڈیا کے بیوروچیف کو دیئے گئے عشائیے میں خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر این اے 4 کے آزاد امیدوار الحاج لیاقت علی خان، دفاع پاکستان کونسل کے چیف کوآرڈینئٹر اور این اے 120 کے سابق آزاد امیدوار محمد یعقوب شیخ، ملی مسلم لیگ کے رہنما حارث ڈار، میڈیا کواڈینیٹر احمد ندیم اور دیگر بھی موجود تھے۔ سیف اللہ خالد نے کہا کہ ہم جب سے میدان میں اترے ہیں ہمارے خلاف پروپیگنڈا کیا جارہا ہے۔ ملی مسلم لیگ کی رجسٹریشن کے معاملے میں الیکشن کمیشن نے موجودہ حکومت کے پریشر میں جانبداری کا مظاہرہ کیا۔ الیکشن کمیشن نے کہا کہ ملی مسلم لیگ کو وزارت داخلہ سے کلیئر کروائیں۔ وزارت داخلہ تو ن لیگ حکومت کے تحت ہے جس کے خلاف این اے 120 میں ہم نے الیکشن لڑا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے لیے خطرناک امریکا و ہندوستان نہیں بلکہ جرات مند قیادت کا فقدان ہے۔ ہمارے حکمرانوں نے پوری قوم کو امریکی غلام بنادیا ہے ہم اس غلامی سے نکالنا چاہتے ہیں۔ جب تک الیکشن کمیشن رجسٹر نہیں کرتا ہماری سیاست جاری رہے گی۔ سیاست سے روکنا الیکشن کمیشن کے دائرہ اختیار میں نہیں آتا۔ دفاع پاکستان کونسل کے چیف کواڈینیٹر اور این اے 120کے سابق آزاد امیدوار محمد یعقوب شیخ نے کہا کہ مسلم لیگ قائداعظم کی نظریاتی جماعت تھی جس نے پاکستان بنایا تھا۔ جو آج کئی حصوں میں بٹ چکی ہے۔ موجودہ ن لیگ کا مال کمانے کے علاوہ کوئی نظریہ ہے نہ سوچ ہے انہوں نے کہا کہ قومیں ہمیشہ نظریہ پر زندہ ہوتی ہیں۔ ہم نظریاتی سیاست کے لیے میدان میں اتریں ہیں۔ ہماری سیاست خدمت انسانیت ہے۔ اس موقع پر این اے 4 کے آزاد امیدوار الحاج لیاقت علی خان نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حلقہ میں موجود روایتی سیاست کا رخ تبدیل کریں گئے۔ نظریاتی سیاست کو رواج دیں گئے۔ وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے منتخب نمائندوں نے عوام سے ووٹ لیکر بدلے میں دکھ درد کے کچھ نہیں دیا ہے۔ این اے 4 کے روڈ، گلیاں، محلے اس بات کی منہ بولتی مثال ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم علاقے میں بچیوں کے تعلیمی ادارے اور میڈیکل سینٹر بنائیں گے۔ اور روزگار کے بہتر مواقع فراہم کریں گے۔

mml2

Print Friendly

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>