تازہ ترین
ملک میں صوبائیت و لسانیت کے جھگڑے ختم اوراخوت و رواداری کی فضا پیدا کرنا چاہتے ہیں۔ملی مسلم لیگ

ملک میں صوبائیت و لسانیت کے جھگڑے ختم اوراخوت و رواداری کی فضا پیدا کرنا چاہتے ہیں۔ملی مسلم لیگ

لاہور(پاکستان اپڈیٹس )ملی مسلم لیگ کے مرکزی قائدین نے کہا ہے کہ ملک میں صوبائیت و لسانیت کے جھگڑے ختم اوراخوت و رواداری کی فضا پیدا کرنا چاہتے ہیں۔ تعلیم و معیشت کا نظام بہتر اور قومی و ملی وحدت کو پروان چڑھایا جائے گا۔ آج 13اگست کو ناصر باغ مال روڈ پر بڑا جلسہ عام ہو گا۔ 14اگست کو چاروں صوبوں و آزاد کشمیر سمیت آزادکشمیر اور گلگت بلتستان میں جلسوں، کانفرنسوں اور ریلیوں کا انعقاد کیا جائے گا۔ این اے 120میں بھرپور انتخابی مہم چلائی جائے گی۔ نظریہ پاکستان رائج کرنا ملی مسلم لیگ کا سب سے بڑا ہدف ہے۔ہم73کے آئین کے تحت ملک میں قانون کی عملداری چاہتے ہیں۔ان خیالات کا اظہار ملی مسلم لیگ کے صدر سیف اللہ خالداور جنرل سیکرٹری شیخ فیاض احمد نے پریس کلب میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر این اے 120سے ملی مسلم لیگ کے حمایت یافتہ امیدوار قاری یعقوب شیخ بھی موجود تھے۔ ملی مسلم لیگ کے رہنماﺅں نے پریس کانفرنس کے دوران کہاکہ آج 13اگست کوناصر باغ مال روڈ لاہور پر عظیم الشان استحکام پاکستان کانفرنس ہو گی جس میں ملک کی تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں،وکلائ،طلبا،کسان تنظیموں کو شرکت کی دعوت دی گئی ہے۔ چودہ اگست کوبھی ضلعی سطح پرپاکستان کے تمام شہروں میں یوم آزادی کی مناسبت سے پروگرام کریں گے جن میں لاکھوں افراد شریک ہوں گے۔ ہم نے پاکستان کا پرچم اٹھایا ہے اوراس کا تحفظ کریں گے۔ آئین کی دفعہ 62اور 63ختم کرنے کی کوششیں درست نہیں۔ ان چیزوں کو بازیچہ اطفال نہیں بننا چاہیے۔ ملی مسلم لیگ کی جانب سے 7اگست کو الیکشن کمیشن میں رجسٹریشن کیلئے کاغذات جمع کروادیے گئے ہیں۔انہوں نے کہاکہ ہم این اے 120میں انتخابی مہم بھرپور انداز میں شروع کر رہے ہیں۔ ہر محلہ میں اپنا دفتر کھولیں گے اور زبردست رابطہ مہم چلائی جائے گی۔ اس سلسلہ میں آج سے ہی ہم نے اپنے کام کا آغاز کر دیا ہے۔انہوںنے کہاکہ 73کے آئین میںقر آن و سنت کو بالا قانون کہا گیا ہے۔ہم ملک میں73کے آئین کے تحت قانون کی عملداری اور صوبائیت،لسانیت،عصبیت کے جھگڑے اور مفادات و معرکہ آرائی کی سیاست ختم کر کے اخوت اوررواداری کی فضا پیدا کرنا چاہتے ہیں۔ہم قومی و ملی وحدت کو پروان چڑھائیں گے۔تعلیم و معیشت کے نظام کو بہتر کریں گے اور پاکستان جن مسائل کا شکار ہے ان کو حل کرنے کی کوشش کریں گے۔سیف اللہ خالد نے کہاکہ پاکستان کے نصاب تعلیم سے نظریہ پاکستان کو خارج کیا جا رہا ہے ہم نظام و نصاب تعلیم کی بنیاد نظریہ پاکستان کو بنائیں گے۔ پاکستان بے مثال قربانیوں کے نتیجہ میں حاصل ہوا ،یہ عام خطہ نہیں۔آنے والے وقت میں پاکستان دنیا کی قیادت کرے گا۔انہوں نے کہاکہ پاکستان میں اس وقت پانی کا بہت بڑا مسئلہ ہے۔ ہمارے سب دریا کشمیر سے آتے ہیں۔ اس لحاظ سے پاکستان کی بقا پانی پر منحصر ہے۔آبی ماہرین کی یہ بات درست ہے کہ پاکستان کے پانیوں کو آزاد نہ کروایا گیا تو پانیوں کے مسئلہ پر جنگ ہو سکتی ہے۔کشمیر کو بانی پاکستان نے شہ رگ کہا تھا ،ملی مسلم لیگ اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روشنی میں استصواب رائے کی حمایت کرتی ہے اور یو این کو پیغام دیتی ہے کہ فوری استصواب رائے کروا کر کشمیریوں کو انکا حق دیا جائے،ہم کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کی مکمل مددوحمایت کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پانچوں صوبوں کے عوام کو ان کی دہلیز پر حقوق پہنچائیں گے۔اقلیتوں کے حقوق کابھی تحفظ اورانکی عزت و وقار کا خیال رکھا جائے گا۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ وزیر اعظم نواز شریف کے قافلہ گذرنے کے دوران دو افراد کی وفات پر انہیں گہرا رنج و غم ہے۔ ہر فرد اور تنظیم کو پروگرام کرنے کا حق ہے لیکن انسانیت کا قتل نہیں ہونا چاہیے۔ حکومت کو چاہیے کہ وہ جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین کی دادرسی کرے اوران افسوسناک واقعات کے ذمہ داران کیخلاف قانون کے مطابق کاروائی کی جائے۔

mml1 mml2

Print Friendly

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>