بینر
بینر
بینر
بینر
بینر
بینر
بینر
بینر

آئی ایس پی آ کا بیان حکومت کی مشاورت سے جاری ہوا، کچھ بھی ہو جائے، حدود سے تجاوز نہیں کرنے دیں گے: وفاقی وزیر داخلہ

اسلام آباد (پاکستان اپڈیٹس ) وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ آئی ایس پی آر سے جاری ہونے والا بیان حکومت کی مشاورت کے بعد شائع کیا گیا ہے، غلط فہمیاں جان بوجھ کر پیدا کی گئیں، نیت میں فتور نہیں ہونا چاہئے، باقی سب ٹھیک ہے، حالات خراب ہوئے تو ذمہ دار یلغار کرنے والے ہوں گے۔ پاک فوج کی جانب سے وضاحتی بیان جاری ہونے کے بعد ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے چوہدری نثار نے کہا کہ آرمی چیف کے ساتھ اکثر ملاقات ہوتی رہتی ہے، پاکستان کی افواج بالکل غیر سیاسی ہے۔ فوج کیلئے ضامن اور ثالث کا لفظ استعمال کیا گیا جو غیر آئینی و غیر قانونی ہے جبکہ آئی ایس پی آر سے سہولت کار کالفظ استعمال کیا جو بالکل آئین کے دائرہ کار میں ہے اور اس بیان نے حکومت کے موقف کی تائید کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ فوج کو نہ ضامن بننے کا کہا اورنا ہی ثالثی کا، حکومت نے ذاتی انا کی فصیل کھڑی کرنے کے بجائے آئین کے دائرہ کار میں رہتے ہوئے فوج کو سہولت کار کا کردار ادا کرنے کی ذمہ داری دی تھی۔ انہوں نے کہا کہ بغیر تصدیق کہا جا رہا ہے کہ وزیراعظم اور اسمبلیاں تحلیل کر دی جائیں، ایک الزام پر منتخب افراد کو گھر بھیج دینا اور اسمبلیاں تحلیل کر دینا کیسی منطق ہے، عمران خان اور طاہر القادری نے ہماری تجاویز کا انکار کیا، عمران خان کے 6 مطالبات میں سے پانچ مطالبات بھی تسلیم کر لئے ، حکومت نے دونوں رہنماﺅں کو منانے میں ہر طرح کی کوشش کی لیکن اس کے باوجود معاملہ حل نہ ہو سکا۔ انہوں نے مزید کہا کہ فوج کے ساتھ طاہر القادری اور عمران خان کا رابطہ رہتا ہے۔ روز ٹی وی پر آنے سے لوگ اکتا جاتے ہیں، دھرنے والوں نے ملک کو بیماری میں مبتلا کر دیا ہے اور جس طرح کی الزام تراشی کی جاتی ہے اور جھوٹ بولے جاتے ان کی مثال نہیں ملتی، 8 سے 10 ہزار لوگ یہاں بیٹھے ہیں جن میں سے بڑی تعداد منہاج القرآن کے عملے اور ان کے خاندان کی ہے جبکہ بچوں اور عورتوں کو ڈھال کے طور پر استعمال کیا جا رہا ہے، اگر یہاں لاکھوں لوگ بیٹھے ہوتے تو میں اور حکومت دونوں خوفزدہ ہوتے، جن لوگوں نے ٹی وی پر قبضہ کیا ہوا ہے، ان کو عوام کی مشکلات کا احساس نہیں ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ صبح سے شام تک ایک ہی طرح کی باتیں دہرائی جاتی ہیں اور جھوٹ کے پہاڑ کھڑے کئے جاتے ہیں جس کے باعث عوام ہیجان انگیزی میں مبتلا ہو رہی ہے، کیا ایسا کرنے سے ملک کی خدمت ہوتی ہے؟ ۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف کا استعفیٰ مسئلے کا حل نہیں، یہ جنگل کا قانون ہو گا، ہر بات پر دھمکی دینا اچھی بات نہیں، کچھ بھی ہو جائے حدود سے تجاوز نہیں کرنے دیں گے۔ چوہدری نثار علی خان نے حیرانگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف کی آرمی چیف جنرل راحیل شریف کے ساتھ ملاقات میں وہ بھی شریک تھے اور اس ملاقات میں ہونے والے فیصلے کا اظہار بھی کیا گیا تھا لیکن اس کے باوجود فوج کے سہولت کار کے کردار پر ایک حشر برپا کر دیا گیا اور اسے طرح طرح کے معنی دے کر اور غیر آئینی و غیر قانونی کے لبادے میں اوڑھ دیا گیا جس کی وضاحت آج قومی اسمبلی کے اجلاس میں بطور وزیر ادخلہ پہلے میں نے دی اور پھر وزیراعظم نواز شریف نے بھی اس کی وضاحت کی تاہم اس کے باوجود جان بوجھ کر غلط فہمی پیدا کی گئی اور یہ ان لوگوں کا کام ہے جو فوج کو اپنے سیاسی مقاصد کیلئے استعمال کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اسلام آباد میں چند ہزار لوگوں کو اکٹھے کر کے جو روایت ڈالی جا رہی ہے وہ غلط ہے، کبھی کارکنوں کو کفن پہنا کر تو کبھی قبریں کھود کر، کیا کسی مہذب اسلامی معاشرے میں ایسا ہوتا ہے یا ایسا ماحول پیدا کیا جاتا ہے؟۔ وزیر داخلہ نے کہا آئی ایس پی آر سے جاری ہونے والا بیان پہلے میرے پاس آیا جسے وزیراعظم کو دکھایا گیا اور حکومت کی منظوری کے بعد اسے شائع کیا گیا ہے اور اس بیان سے حکومت کے نقطہ نظر کی عکاسی ہوتی ہے۔

سیاسی بحران کے حل کیلئے وزیراعظم نے آرمی چیف سے درخواست کی تھی: ڈی جی آئی ایس پی آر

 

سیاست کے نام پر فحاشی و عریانی پھیلائی جارہی ہے، یہ لاالہ الااللہ کی جاگیر ملک ہے: پروفیسر حافظ محمدسعید

 

بحران کے حل کیلئے حکومت نے درخواست کی تھی: ڈی جی آئی ایس پی آر

 

بھارت سرکار کشمیری طلباءپر تشدد جیسے ہتھکنڈے اختیار کر کے کشمیریوں کے جذبہ حریت کو سرد کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکتی:مذہبی و سیاسی قائدین

 

سیاستدانوں کا ثالثی کیلئے فوج کو بلانا اچھا اقدام نہیں ہے صاحبزادہ ابوالخیر محمد زبیر

 

سیاسی معاملات میں فوج کی شرکت اچھی مثال نہیں دنیا میں اس سے ہماری عزت میں کوئی اضافہ نہیں ہو: سراج الحق

 

پاکستان کا قیام ایک معجزہ ہے اس کی بنیادوں میں لاکھوں شہدا ءکا خون شامل ہے: لالہ مبشر بٹ ایڈووکیٹ ،،،سیالکوٹ کی مزید خبریں

 

مہمند ایجنسی، جمعیت علماءاسلام (ف) تحصیل حلیمزئی کی تنظیم سازی مکمل،،،،مہمند ایجنسی کی مزید خبریں

 

سرکاری ریکارڈ میں ردو بدل کرنے کا جرم ثابت ہونے پر محکمہ انٹی کرپشن چکوال نے ڈپٹی ڈی ای او ایجوکیشن اور اسسٹنٹ ایجوکیشن آفیسر سمیت پانچ افراد کے خلاف مقدمہ درج کرلیاگیا،،،،چکوال کی مزید خبریں

 

تحریک انصاف اور حکومت کے درمیان مذاکرات میں ڈیڈ لاک برقرار

 

حکومتی دعوے مسترد،رابطوں کا ٹی وی سے پتہ چلا، فوج کیساتھ طے معاہدہ پر قائم ہیں :ڈاکٹرطاہرالقادری

 

فوج کو ثالثی کی درخواست کی ، نہ آرمی چیف نے کردارمانگا: وزیراعظم نوازشریف

 

آرمی چیف سے ملاقات کی درخواست ہم نے نہیں دی تھی : عمران خان

 

حب میں 660 میگا واٹ کاکول پاور پلانٹ تعمیر کرنے کا اعلان

 

بھارت میں پاکستانی ٹیم کی حمایت کرنے پر کشمیری طلبا پر ایک بارپھرتشدد

 

اسلامیہ یونیورسٹی پشاور کے وائس چانسلر اجمل خان کو بازیاب کرالیا گیا

 

آرمی چیف کو کہہ دیا کہ نوازشریف کی موجودگی میں شفاف تحقیقات نہیں ہوسکتیں، عمران خان

 

جنرل راحیل پر واضح کردیا کہ شریف برادران کو کرسی پر نہیں دیکھا چاہتے، طاہر القادری

 

ججزنظربندی کیس میں پرویز مشرف کو 19 ستمبرکو پیش ہونے کا حکم

 

لاہور ہائی کورٹ ، اسمبلیاں توڑنے کی درخواست ابتدائی سماعت کے لیے منظور

 
Find the Best Web Hosting which offers reliable service and top quality support
بینر